Jadid Khabar

مہاراشٹرحکومت نے رمضان کی گائیڈلائن جاری کیاجتماعی نماز،تراویح اورمساجدمیں افطارپرپابندی

Thumb

نئی دہلی،13اپریل(ایجنسی) مہاراشٹر میں کوروناوائرس کے بڑھتے ہوئے معاملے کے پیش نظرآج ریاستی حکومت کی وزارت داخلہ نے رمضان المبارک کیلئے گائیڈ لائن جاری کی ہے جس کے مطابق اجتماعی نماز،نماز تراویح اور مساجدمیں افطار پر پابندی عائد کی گئی ہے۔واضح رہے کہ مسلمانوں کے ایک بہت بڑے طبقے اور علماکرام اور مسلم تنظیموں نے ریاستی حکومت سے درخواست کی تھی کہ رمضان المبارک کے دوران لگنے والے نائٹ کرفیومیں ڈھیل دی جائے اور بجائے رات آٹھ بجے سے کرفیوجاری ہونے کے اس کے اوقات میں تبدیلی کی جائے اور10 بجے سے کرفیونافذ کیاجائے تاکہ نمازتراویح اداکرسکیں۔اس ضمن میں جمعیۃ علماء سمیت کئی ایک ملی تنظیموں نے بامبے ہائی کورٹ میں عرضداشت بھی داخل کی ہے اور حکومت سے درخواست بھی کی ہے کہ رمضان المبارک کے اس مہینے میں مسلمانوں کو کرفیوکے دوران رعایت دی جائے اور ان کے مذہبی فرائض کو اداکرنے کی اجازت دی جائے۔عدالت نے اب تک اس عرضداشت کی سماعت نہیں کی ہے اور آج ہی چاند نظر آنے کے بعد نماز تراویح کااہتمام کیاجاتاہے۔رمضان کے پیش نظر تراویح پڑھنے کی اجازت دی جائے۔ریاستی حکومت نے جو گائیڈ لائن جاری کی ہے اس کے مطابق اس کے ساتھ ہی بھیڑبھاڑپر قابو پانے کے لئے افطار،بازاروں اور خریداری کے لئے مخصوص اوقات کا تعین کیا گیا ہے اسی پر خریداری کریں مہاراشٹر میں کورونا کے اصول و ضوابط پرپابندی لازمی ہے کورونا اصول کی خلاف ورزی پر کارروائی کا بھی انتباہ جاری کیا گیا ہے ممبئی اور ریاست میں کورونا کی دوسری لہر کی وجہ سے ریاستی سرکار نے حکمنامہ میں کئی پابندیاں عائد کی ہیں مساجد کے ساتھ عوامی مقامات پر بھی بلا ضرورت نکلنے پرپابندی ہے مساجد میں اجتماعی تراویح وعظ اور مذہبی اجتماعات پر پابندی عائدکر دی گئی ہے۔ ریاست میں کورونا کے پھیلاؤ کی شدت کی وجہ سے رمضان المبارک میں مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے مسلم قائدین کے معرفت رمضان سادگی سے منانے کے لئے بیداری مہم بھی شروع کی گئی ہے آن لائن مذہبی نشریات کی اجازت دی گئی ہے ممبئی میں رمضان میں اسٹال لگانے کی بھی ممانعت ہے یہ گائڈ لائن ریاستی سرکارکے وزارت داخلہ نے جاری کی ہے۔ ممبئی اور ریاست بھر میں کورونا کی وجہ سے پابندی عائد کی گئی ہے تاکہ بھیڑبھاڑ کو قابو کیا جائے۔اس گائیڈلائن سے مسلمانوں میں مایوسی پائی جارہی ہے خاص طورسے تاجر طبقہ بڑاپریشان ہے کیوں کہ امسال بھی سال گذشتہ کی طرح روایتی رمضان بازار نہیں لگ سکیں گے۔عام طور سے افطار کے سامان اسٹالوں پر ہی فروخت ہوتے ہیں اوراسٹال لگانے پر پابندی سے افطارکے سامانوں کا دستیاب ہونابھی مشکل نظر آرہاہے۔رمضان کے آخری عشرے میں عید کی تیاری کیلئے جو بازارلگتاتھاوہ بھی اب نہیں لگ پائے گا۔

 

Ads