Jadid Khabar

شکست خوردہ لوگوں کو شکست دینے والے یاد آتے ہیں: اکھیلیش

Thumb


لکھنو، 23اکتوبر (یو این آئی) اترپردیش اسمبلی انتخابات میں رائے دہندگان کو اپنا کردار ادا کرنے میں ابھی وقت ہے لیکن حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور سماج وادی پارٹی (ایس پی) نے اپنی اپنی جیت کا دعوی کرتے ہوئے ایک دوسرے پر بیان بازی سے حملے شروع کردیئے ہیں۔
اسی سلسلہ میں ایس پی کے ریاستی صدر اکھیلیش یادو نے سنیچر کو ٹوئٹ کیا شکست خوردہ لوگوں کو ہر لمحہ شکست دینے والے یاد آتے ہیں۔ 22میں بی جے پی کی تاریخی شکست ہوگی۔ ’بائس (2022) میں بائیسکل‘۔
اکھیلیش کے ٹوئٹ کے جواب میں یوگی کابینہ کے اہم رکن اور حکومت کے ترجمان سدھارناتھ سنگھ نے کہاکہ ایس پی کے صدر کی یہ باتیں سو فیصد صحیح ہیں۔ پر بی جے پی کے لئے نہیں ایس پی کے لئے۔ انہوں نے کہاکہ اسمبلی، لوک سبھا سے لیکر پنچایت انتخابات میں منہ کی کھانے کے بعد اب اکھیلیش کو خواب میں بھی بی جے پی سے شکست کاخوف ستانے لگا ہے۔یہی وجہ ہے کہ وہ روز اپنی تاریخی جیت اور بی جے پی کی شکست کا دعوی کرتے رہتے ہیں۔ کبھی کبھی تو جیت والی سیٹوں کا حساب بھی بھول جاتے ہیں۔ بے چارے۔2022کے اسمبلی انتخابات میں یقینی شکست سے ان کی دماغی حالت سمجھی جاسکتی ہے۔
انہوں نے کہاکہ میری اکھیلیش کے ساتھ پوری ہمدردی ہے لیکن یہ طے ہے کہ وہ کچھ بھی کرلیں، ان کے بہار کے دن گئے۔

 

Ads