Jadid Khabar

بی جے پی کے اقتدار میں آتے ہی گورکھا کے مسائل حل کرلئے جائیں گے:امت شاہ

Thumb

کلکتہ 13اپریل (یو این آئی)مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے آج یہ وعدہ کیا ہے کہ بی جے پی کے اقتدار میں آنے کے بعد پہاڑ کے عوام کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔امیت شاہ نے کہا کہ ہندوستان کے آئین میں تمام مسائل کو حل کرنے کی گنجائش موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ میں وعدہ کرتا ہوں کہ بی جے پی کی ڈبل انجن سرکار گورکھا کے مسائل کو ترجیحی بنیاد پرحل کرے گی۔اب گورکھا شہریوں کو احتجاج نہیں کرنا پڑے گا۔تاہم امیت شاہ نے یہ نہیں بتایا کہ وہ گورکھا کے مسائل کو کس طرح حل کریں گے۔کیوں کہ یہاں کی پارٹیاں علاحدہ ریاست کی تشکیل کا مطالبہ کرتی رہی ہیں۔اس کے لئے گزشتہ کئی دہائیوں سے تحریل چل رہی ہے۔2017میں بھی زبردست تحریک چلائی گئی تھی۔امت شاہ نے یہ دعویٰ کیا کہ گورکھاس ہندوستان کا فخر ہیں، ان کو کوئی نقصان نہیں پہنچاتا ہے۔ایک دن بعد امیت شاہ نے کہا کہ این آر سی کے نفاذ کا کوئی ارادہ نہیں ہے اور اگر این آر سی نافذ بھی ہوتا ہے تو یہاں کے عوام کو فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ دارجلنگ کی ترقی ممتا بنرجی کے دور اقتدار میں روک گیاتھا۔ترنمول کانگریس کے لیڈران صرف تفریح کے لئے یہاں آتے ہیں۔ممتا بنرجی نے اس مرتبہ اپنی پارٹی کے امیدوار یہاں کی تین سیٹوں کے لئے کھڑی نہیں کیا ہے۔امیت شاہ نے کہا کہ ممتا بنرجی نے کچھ لیڈروں کے خلاف جھوٹے مقدمات دائر کرکے گورکھا سے تعلقات خراب کرنے کی کوشش کی تھی۔انہوں نے کسی کا نام لئے بغیر کہا، "دیدی نے بہت سے لوگوں کے خلاف بہت سے قتل اور مقدمات قائم کر چکے ہیں۔ بی جے پی اقتدار میں آنے کے بعد ایسے تمام لوگوں کو معافی دے گی۔بی جے پی کے سابق اتحادی جی جے ایم رہنما، بمل گرونگ کے خلاف پرتشدد تحریک کی قیادت کرنے کی وجہ سے روپوش ہوگئے تھے۔گزشتہ سال اکتوبر میں وہ سامنے آئے اور ترنمول کانگریس کے ساتھ ہاتھ ملالیا۔۔ریاستی انتظامیہ نے اب ان میں سے کچھ مقدمات واپس لینے کے لئے عدالتوں سے رجوع کیا ہے۔اس مرتبہ گورکھا جن مکتی مورچہ کی دونوں گروپ نے اپنے امیدوار کھڑے کئے ہیں۔

 

Ads