Jadid Khabar

وکیل بیٹی کی وجہ سے گھپلہ پر جیٹلی خاموش :راہل

Thumb

نئی دہلی، 12مارچ (یو این آئی) کانگریس صدر راہل گاندھی نے آج الزام لگایا کہ بنک گھپلہ کے ملزمین نے معاملہ سامنے آنے سے پہلے ہی وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی وکیل بیٹی کی لا کمپنی کو بڑی رقم دی تھی اس لئے مسٹر جیٹلی اس گھپلہ پر خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔مسٹر گاندھی نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یہ انکشاف ہوا ہے کہ بینک گھپلہ کے سامنے آنے سے پہلے ملزمین نے وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی وکیل بیٹی کی لا فرم کو بڑی رقم کی ادائیگی کی تھی اور اس لئے ہمارے وزیر خزانہ بیٹی کو بچانے کے لئے پنجاب نیشنل بینک گھپلہ معاملہ میں خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔کانگریس کے صدر نے کہاکہ مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے ملزمین سے وابستہ کئی دیگر لافرموں پر چھاپے مارے ہیں لیکن وزیر خزانہ کی وکیل بیٹی کے معاملہ میں وہ بے اثر ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ سی بی آئی متعلقہ دیگر لا فرموں پر چھاپے مارسکتی ہے تو اس کی فرم پر کیوں نہیں۔

حکومت تکبر چھوڑے اور کسانوں کے مطالبات کو تسلیم کرے :راہل

نئی دہلی، 12مارچ (یو این آئی) کانگریس صدر راہل گاندھی نے اپنے مطالبات کی حمایت میں ممبئی جارہے ہزاروں کسانوں کے ہجوم کو عوامی طاقت کا شاندار مظاہرہ قرار دیا اور کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور مہاراشٹر کے وزیر اعلی دیویندر فرنویس کو ان کا مطالبہ تسلیم کرنا چاہئے ۔مسٹر گاندھی نے کسانوں کے ممبئی مارچ کو عوام کی طاقت کا بے مثال نمونہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کی پارٹی اپنے مطالبات کے لئے مارچ کررہے ہزاروں کسانوں کے ساتھ ہے اور ان کے مطالبات کو تسلیم کیا جانا چاہئے ۔کانگریس صدر نے ٹوئٹ کیا کہ کسانوں کا ممبئی کے لئے عظیم الشان مارچ عوامی طاقت کی شاندار مثال ہے ۔ کانگریس مرکز اور ریاستی حکومت کی امتیازی پالیسی کے خلاف اور مارچ کررہے کسانوں اور قبائلیوں کے ساتھ ہے ۔مسٹر گاندھی نے حکومت سے کسانوں کے مطالبہ کو تسلیم کرنے کی اپیل کی اور کہا کہ میں وزیر اعظم اور وزیر داخلہ سے تکبر ترک کرنے اور کسانوں کے مطالبات کو تسلیم کرنے کی اپیل کرتا ہوں۔خیال رہے ہزاروں کسان ممبئی سے کوئی پونے دو سو کلومیٹر دور ناسک سے پیدل چل کر مہاراشٹر پہنچے ہیں۔

Ads