Jadid Khabar

مرکزی حکومت نے کسانوں کی بہتری کے لئے کئی فیصلے کئے ہیں: تومر

Thumb

ستنا ، 23 اکتوبر (یو این آئی) مرکزی وزیر زراعت نریندر سنگھ تومر نے آج کہا کہ مرکزی حکومت نے کسانوں کی فلاح و بہبود کے لیے کئی فیصلے کیے ہیں۔
مسٹر تومر نے یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مرکز کی مودی حکومت نے کسانوں کے مفاد میں کئی فیصلے کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے زرعی پیداوار کی لاگت قیمت کو کم کرنے کی سمت میں بھی کئی اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے زور دیا کہ چھوٹے کاشتکار ایک گروپ بنا کر مشترکہ طور پر کاشتکاری کریں جس سے زرعی پیداوار کی لاگت میں کمی آئے گی۔
انہوں نے کہا کہ کسانوں کی تحریک کو ختم کرنے کی ذمہ داری ان لوگوں پر عائد ہوتی ہے جنہوں نے تحریک چلانے پر اصرار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کسانوں کے ساتھ ہر سطح پر بات چیت کے لیے تیار ہے۔
تومر نے کہا کہ مدھیہ پردیش کی شیوراج حکومت اچھا کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی یقینی طور پر ضمنی انتخابات میں ایک لوک سبھا اور تین اسمبلی انتخابات میں کامیابی حاصل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ضمنی الیکشن اقتدار کا سیمی فائنل نہیں ہے۔
تومر نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) میں کنبہ پروری کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ لیکن ان لوگوں کو موقع دینے میں کوئی حرج بھی نہیں جو پارٹی میں رہ کر طویل عرصے سے پارٹی کا کام کر رہے ہیں۔
جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا کسانوں کی ناراضگی کا انتخابات پر اثر پڑے گا؟ انہوں نے کہا کہ کئی کسان تنظیموں نے ایجی ٹیشن ختم کر دی ہے ، یہاں تک کہ مٹھی بھر وہ لوگ بھی جو ابھی تک ایجی ٹیشن کے راستے پر ہیں راضی ہو جائیں گے۔ کسانوں کے لیے بات چیت کے دروازے کھلے ہیں۔

Ads