Jadid Khabar

بھارت بند: دہلی میں سخت چوکسی ، لال قلعے کے گرد نقل و حرکت بند

Thumb

نئی دہلی ، 27 ستمبر (یو این آئی) کسانوں کے بھارت بند کے پیش نظر دارالحکومت دہلی میں پیر کو سخت حفاظتی نگرانی کی جارہی ہے ۔لال قلعہ اور پارلیمنٹ کی طرف جانے والے کئی راستوں پر عام گاڑیوں کی آمدورفت پر احتیاطی اقدام کے طور پر آج صبح عارضی طور پر پابندی عائد کردی گئی ہے ۔ جس کی وجہ سے لال قلعہ اور انڈیا گیٹ کے اطراف سے گزرنے والے راہگیروں کو مشکلات کا سامنا ہے ۔ دہلی کے لال قلعے کے نزدیک سے اکثر گزر نے والے ماڈل ٹاؤن کے رہائشی اشوک کمار اور دلیپ سنگھ سمیت کئی لوگوں نے بتایا کہ سڑک کی ناکہ بندی کے بارے میں پہلے کوئی اطلاع نہیں دی گئی تھی۔ ٹریفک پولیس کو اس بارے میں پہلے ہی آگاہ کر دینا چاہیے تھا۔وہیں نئی دہلی کے علاوہ بیرونی دہلی ، مشرقی اور شمال مشرقی اضلاع میں بھی اضافی پولیس فورس کی تعیناتی کے ساتھ ٹریفک کی خصوصی نگرانی کی جا رہی ہے ۔ کسانوں کے احتجاجی مقامات ٹکری اور غازی پور بارڈر سمیت ہریانہ اور اترپردیش سے دہلی میں داخلے کے تمام راستوں پر اضافی پولیس فورس تعینات کی گئی ہے ۔ دہلی پولیس کے علاوہ سیکورٹی کے لیے مرکزی نیم فوجی دستوں کے اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔دہلی پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ صبح 10 بجے تک کہیں سے بھی کسی ناخوشگوار واقعہ رپورٹ نہیں ملی ہے ۔ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے دہلی میں مناسب سکیورٹی فورسز تعینات کی گئی ہیں۔پولیس کا کہنا ہے کہ اگرچہ انڈیا گیٹ ، وجے ، آئی ٹی او اور پارلیمنٹ اسٹریٹ کے علاقوں میں کسی مظاہرے کی کوئی پیشگی اطلاع نہیں ہے اور نہ ہی کوئی خفیہ اطلاع ملی ہے ، تاہم احتیاطی تدابیر کے طور پر پورے علاقے میں اضافی پولیس فورس تعینات کرکے خصوصی سیکورٹی نگرانی کی جا رہی ہے ۔متحدہ کسان موچے کی اپیل پر آج بھارت بند کا انعقاد صبح 6 بجے سے شام 4 بجے تک کیا گیا ہے ۔ اپوزیشن کانگریس ، بائیں بازو کی جماعتوں ، راشٹریہ جنتا دل ، وائی ایس آر کانگریس سمیت کئی سیاسی جماعتوں نے پہلے ہی اس تحریک کی حمایت کا اعلان کردیا تھا۔کسانوں کی تحریک میں تقریباً تمام بڑی سیاسی جماعتوں کی حمایت کے پیش نظر پولیس دارالحکومت میں خصوصی چوکسی برت رہی ہے ۔ جی ٹی روڈ ، روہتک روڈ ، اکشردھام ، نوئیڈا لنک روڈ ، ڈی این ڈی فلائی اوور ، غازی پور روڈ ، وزیر آباد روڈ سمیت قومی دارالحکومت کی کئی بڑی سڑکوں پر پولیس خصوصی نظر رکھے ہوئے ہے ۔ سادہ وردی میں پولیس فورس کی ایک بڑی تعداد جگہ جگہ تعینات کی گئی ہے ۔

 

Ads