Jadid Khabar

امت شاہ جموں و کشمیر کے تین روزہ دورے پر سری نگر پہنچے

Thumb

سری نگر: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ جموں و کشمیر کے تین روزہ دورے پر ہفتے کو سری نگر پہنچے۔ سری نگر کے ہوائی اڈے پر بارش کے بیچ جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے وزیر داخلہ کا استقبال کرتے ہوئے انہیں پھولوں کا گلدستہ پیش کیا۔ واضح رہے کہ یہ پانچ اگست 2019 یعنی دفعہ 370 کے خاتمے اور ریاست کو دو یونین ٹیریٹریوں میں تقسیم کرنے کے مرکزی حکومت کے فیصلے کے بعد وزیر داخلہ کا پہلا دورہ جموں و کشمیر ہے۔مرکزی وزیر داخلہ ایک ایسے وقت میں جموں و کشمیر بالخصوص وادی کے دورے پر آئے ہیں جب یہاں حال ہی میں نامعلوم بندوق براداروں کے ہاتھوں اقلیتوں اور غیر مقامی لوگوں کی نشانہ وار ہلاکتوں کے واقعات پیش آئے۔ ذرائع نے بتایا کہ وزیر داخلہ آج راج بھون میں منعقد ہونے والی سیکورٹی جائزہ میٹنگ کی صدارت کریں گے جس میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا، فوج، پولیس اور پیرا ملٹری فورسز کے اعلیٰ افسر انہیں وادی کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دیں گے۔امت شاہ اپنے تین روز دورہ جموں و کشمیر کے دوران 24 اکتوبر کو جموں میں ایک ریلی سے بھی خطاب کریں گے۔ اس مجوزہ ریلی کا مقام بھگوتی نگر مقرر کیا گیا ہے۔ مرکزی وزیر داخلہ کے دورے کے پیش نظر جموں و کشمیر بالخصوص شہر سری نگر کے قرب و جوار میں سیکورٹی کا فقید المثال بندوبست کیا گیا ہے۔ حکام نے وادی بالخصوص شہر سری نگر کے قرب و جوار میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے ہیں اور کسی بھی ممکنہ ناخوشگوار واقعے کو ناکام بنانے کے لئے بھاری تعداد میں سیکورٹی اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔یو این آئی اردو کے ایک نامہ نگار نے شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کر کے بتایا کہ شہر کے تمام علاقوں میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں اور ناکوں کے جال کو مزید وسیع کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جنگی ساز و سامان سے لیس سیکورٹی اہلکار انتہائی چوکنا ہیں اور ناکوں پر موٹر سائیکلوں کی ضبطی کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ موصوف نامہ نگار نے بتایا کہ ناکوں پر مسافر بردار گاڑیوں کی بھی تلاشی لی جارہی ہے اور ان میں سوار مسافروں کی بھی جامہ تلاشی اور ان کے شناختی کارڈ بھی چیک کئے جا رہے ہیں۔

Ads