Jadid Khabar

پرکاش جاﺅڈیکر کا راہل گاندھی پر حملہ

Thumb


 بنگلورو،24اکتوبر(ایجنسی)بی جے پی نے پنجاب کے ہوشیار پورضلع میں چھ سالہ دلت بچی کے ساتھ زیادتی اور قتل کے واقعہ کولیکر کانگریس کو گھیرا ہے۔ مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے اس معاملے کو انتہائی افسوسناک قرار دیا۔ ساتھ ہی یہ سوال اٹھایا گیا کہ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کو سیاسی ریلیوں کے بجائے متاثرہ خاندان سے ملاقات کرنی چاہئے۔ دراصل یوپی کے ہاتھرس گینگ ریپ کیس میں متاثرہ افراد کے اہل خانہ سے ملنے گئے تھے۔قتل اور عصمت دری کا یہ واقعہ ہوشیار پور کے گاو¿ں ٹانڈہ میں پیش آیا۔ جاوڈیکر نے کہا کہ کانگریس کے زیر اقتدار ریاستوں راجستھان اور پنجاب میں مسلسل ایسے جرائم سامنے آرہے ہیں ۔ لیکن خواتین کے خلاف اس طرح کے جرائم پر کانگریس رہنما راہل گاندھی نے کا کوئی جانکاری نہیں لی ہے۔ جبکہ انہیں متاثرہ افراد کے گھر جاکر ان کے اہل خانہ سے ملاقات کرنی چاہئے۔واضح رہے کہ یوپی کے ہاتھرس میں گینگ ریپ اور قتل معاملے میں راہل گاندھی اور ان کی بہن پرینکا گاندھی مقتولہ کے کنبہ سے ملاقات کی تھی۔ راہل اور پرینکا نے یوپی پولیس کی سخت پابندیوں کے درمیان غمزدہ خاندان سے ملنے کے لئے جدوجہد کی تھی۔ سڑک پر کانگریس کارکنوں کی ہنگامہ آرائی اور اس معاملے کو سیاسی طول پکڑتا دیکھ کر یوگی حکومت نے راہل۔پرینکا سمیت پانچ رہنماو¿ں کو ہاتھرس میں متاثرہ کے اہل خانہ سے ملنے کی اجازت دی تھی۔بی جے پی نے الزام لگایا کہ کانگریس سیاسی مقاصد کے لئے اس واقعے کو طول دے رہی ہے۔اس کے کچھ دن بعد ہی راجستھان میں ایک پجاری کو زندہ جلانے کا واقعہ سامنے آیاتھا۔ بی جے پی نے کانگریس قائدین راجستھان میں متاثرہ کنبے سے ملنے نہیں جانے کے بارے میں بھی سوالات اٹھائے تھے۔ کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی فی الحال بہار اسمبلی انتخابی مہم کے دورے پر ہیں۔ انتخابات کے پہلے مرحلے کی تاریخ قریب آنے کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے بھی جمعہ کو پہلی ریلی کی تھی۔

 

Ads