Jadid Khabar

مسلم پرسنل لابورڈ کو دہشت گردوں کی تنظیم کہنے کی مذمت

Thumb

نئی دہلی، 14فروری(یو این آئی)آل انڈیا مسلم کانفرنس کے قومی صدر اور بہار کے سابق وزیر شمائل نبی اور کانفرنس کے قومی جنرل سکریٹری ڈاکٹر سید عبداللہ مدنی نے بی جے پی ایم پی ساکشی مہاراج کے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے بارے میں دیئے گئے بیان کی سخت لفظوں میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ان کا زہراگلنا کوئی نئی بات نہیں بلکہ وہ اکثرو بیشتر مسلمانوں اوران کی تنظیموں کو غلط طریقہ سے پیش کرتے ہیں۔خیال رہے کہ ساکشی مہاراج نے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کو دہشت گرد تنظیم کہا ہے ۔شمائل نبی نے کہا کہ مہاراج آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے بارے میں معلومات کے بغیر ایسا متنازع بیان دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بورڈ مسلمانوں کی ایسی جماعت ہے جو سیکولرزم پر پورا اعتماد رکھتی ہے اور اس کے اکابرین ہمیشہ ملک میں امن و شانتی کے خواہاں رہے ہیں۔ہاں، مسلمان کے معاملات مداخلت کے وقت بورڈ شرعی قانون کے حوالے سے مسلمانوں کی رہنمائی کرتا ہے اور کورٹ کے سامنے اپنے دلائل پیش کرتا ہے ۔ ایسی تنظیم کو دہشت گرد قرار دینا اقلیتوں کے حقوق کی پامالی کے مترادف ہے ۔دونوں لیڈروں نے پاکستان کو خبردار کیا کہ وہ خواہ مخواہ کشمیر میں اپنی گھس پیٹھ بند کرے ۔ اسے معلوم ہونا چاہئے کہ جموں و کشمیر کے عوام ہندوستان کے ساتھ ہیں۔انہوں نے آرایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کے بیان پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی اور اپنی تنظیم کی طاقت کو تو بتاتے ہیں مگر ہندوستانی فوج کی عظمت اور ہندوستان کے عوام کے عزائم کی قدر نہیں کرتے جو بے حد افسوسناک ہے ۔

Ads