Jadid Khabar

مودی حکومت کوآرایس ایس چلارہی ہے : راہل گاندھی

Thumb

بنگلورو، 13 فروری (ایجنسی)کانگریس کے سربراہ راہل گاندھی نے مرکز میں بی جے پی حکومت پر دوبارہ حملہ کرتے ہوئے کہا کہ آرایس ایس حکومت چلارہی ہے اور ہر محکمہ اور وزارت میں اپنے لوگوں کو بٹھارکھا ہے۔ کرناٹک اسمبلی انتخابات سے قبل حیدرآباد۔کرناٹک خطے کے اپنے چار روزہ بس دورہ کے آخری مرحلے میں پروفیشنلز اور تجارتی لیڈران کے ساتھ بات چیت کے دوران کہا کہ آرایس ایس نے وزارت میںاپنے ہر سکریٹریز کو مقررکررکھا ہے۔ راہل نے کہاکہ نیتی آیوگ میں بھی آر ایس ایس کے لوگ ہیں۔ ادارہ کسی پارٹی یا نظریات سے تعلق نہیں رکھتا ہے۔ ہندوستانی کی خارجہ پالیسی میں بھی گڑبڑی ہے۔ چین تمام ہمسایہ سارک ممالک میں خاص اثرورسوخ رکھتا ہے ۔ ہندوستان کو اس نے الگ تھلگ کردیا ہے۔ انہوںنے تجارتی کمیونٹی کو یقین دہانی کرائی کہ اگر کانگریس 2019 میں اقتدار میں آتی ہے تو وہ اشیاء وخدمات ٹیکس (جی ایس ٹی) میں تبدیلی لائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس سلیب میں بدلاؤ لائیں گے۔ موجودہ جی ایس ٹی بہت زیادہ ہے۔ کانگریس صدر نے الزام عائد کیا کہ نوٹوں کی منسوخی بھی آرایس ایس کا فیصلہ تھا اور یہ ریزروبینک آف انڈیا کا نہیں تھا۔ دو دن قبل آرایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت کے ذریعہ ہندوستانی فوج پر دیئے گئے تبصرے پر معافی کا مطالبہ کیا تھا۔ راہل کا آر ایس ایس پر براہ راست حملہ دائیں بازوں کی تنظیم کو کھلا چیلنج ہے جو ہندوتوا اور دیگر متعلقہ مسائل کے ذریعہ کرناٹک انتخابی مہم میں اثرورسوخ بنارہی ہے۔ 

Ads