Jadid Khabar

اگستا سودا: تحقیقات کا مطالبہ کرنے والی مفاد عامہ کی عرضی مسترد

Thumb

نئی دہلی، 13 فروری (ایجنسی)سپریم کورٹ نے این جی او سوراج ابھیان کی اس عرضی کو مسترد کردیا ہے جس میں چھتیس گڑھ حکومت کی جانب سے اگست ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹرکی خریداری میں مبینہ بے ضابطگیوں کی تحقیقات کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ عدالت عظمی کا یہ فیصلہ 2006-07 میں وی آئی پی استعمال کیلئے اگست ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر کی خریداری پر چھتیس گڑھ حکومت کے سوالوں کے گھیروں میں آنے کے کئی ہفتوں بعد آیا ہے اور پوچھا کہ کیا وزیراعلی رمن سنگھ کے بیٹے کا اس میں مفاد جڑا ہوا ہے۔ جسٹس اے کے گوئل اور یو یو للت پر مشتمل سپریم کورٹ کی بینچ نے ہیلی کاپٹرکی خریداری میں مبینہ بے ضابطگیاں اور وزیراعلی کے بیٹے سے جڑے مبینہ غیرملکی بینک اکاؤنٹس کے بارے میں ریاست سے پوچھ تاچھ کی تھی جس کی بنیاد پر عرضی داخل کرکے جانچ کا مطالبہ کیا گیا ہے کہ ابھیشیک سنگھ کے مفاد کیا ہیں۔ وزیراعلی کے بیٹے کانام میں جو اس معاملے میں آیا ہے۔ ہمیں اس پر آپ کو مطمئن کرنا ہوگا۔ عدالت عظمی کی بینچ نے سینئر وکیل مہیش جیٹھ ملانی سے یہ بات کہی تھی جو رواں سال 31 جنوری تک ریاست کی نمائندگی کررہے تھے۔ جیٹھ ملانی نے دلیل دی تھی کہ یہ الزامات ناقابل یقین تشریح ہیں اور ان کے دعوؤوں کو ثابت کرنے کیلئے کافی ثبوت نہیں ہیں۔ عرضی میں تمام الزامات بے بنیاد ہیں۔ 

Ads