Jadid Khabar

’چوکیدار چور ہے‘ والے بیان پر راہل سے سپریم کورٹ کا جواب طلب

Thumb

نئی دہلی، 15 اپریل ( یواین آئی) سپریم کورٹ نے رافیل لڑاکا طیارے سودا معاملہ میں دیئے گئے ایک ‘متنازعہ’ بیان کے سلسلہ میں بی جے پی کی رکن پارلیمنٹ میناکشی لیکھی کی جانب سے دائر توہین عدالت کی درخواست پر کانگریس صدر راہل گاندھی سے پیر کو جواب طلب کیا۔ لیکھی نے مسٹر گاندھی کے اس بیان کو لے کر توہین کی عرضی دائر کی ہے جس میں کانگریس صدر نے کہا تھا‘‘سپریم کورٹ نے بھی تسلیم کیا ہے کہ چوکیدار چور ہے۔‘‘محترمہ لیکھی کی جانب سے پیش سینئر وکیل مکل روہتگی نے دلیل دی کہ کانگریس صدر نے رافیل سودا معاملہ میں نظر ثانی کی درخواستوں پر مرکزی حکومت کے ابتدائی اعتراضات مسترد کئے جانے کے بعد یہ تبصرہ کیا تھا کہ ‘سپریم کورٹ نے بھی کہا ہے - چوکیدار چور ہے ’۔ جسٹس گگوئی نے درخواست پر غور کرتے ہوئے کہا کہ عدالت نے کسی بھی موقع پر ایسا کوئی تبصرہ نہیں کیا، جیسا مسٹر گاندھی دعوی کر رہے ہیں. عدالت کا فیصلہ مکمل طورپر نظر ثانی درخواستوں کے ساتھ منسلک دستاویزات کی منظوری کے قانونی سوال پر مبنی تھا۔ بنچ نے کہا‘‘راہل گاندھی اس تبصرہ کے سلسلہ میں 22 اپریل تک اپنا موقف رکھیں’’۔غور طلب ہے کہ مسٹر گاندھی نے کہا تھا، "پورا ملک یہ کہہ رہا ہے کہ چوکیدار چور ہے . یہ جشن کا دن ہے . عدالت نے اس معاملے میں انصاف کیا ہے ’’۔کانگریس صدر نے کہا تھا، ملک کی ٹاپ عدالت نے مان لیا ہے کہ رافیل میں کچھ بدعنوانی ہوئی ہے اور یہ بھی مان لیا ہے کہ چوکیدار نے ہی چوری کروائی ہے . مسٹر گاندھی کا یہ بیان امیٹھی میں کاغذات نامزدگی داخل کرنے کے پروگرام موقع پر آیا تھا۔

Ads