Jadid Khabar

پرانے روسٹر نظام کے لئے حکومت آرڈی ننس لائے گی

Thumb

نئی دہلی، 11فروری (یو این آئی) حکومت نے اعلی تعلیمی اداروں میں تقرریوں میں ریزرویشن سے متعلق پرانا روسٹر نظام بحال کرنے کے لئے آرڈی ننس یا بل لانے اور نئے روسٹر نظام کے تحت فی الحال تقرر یاں نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔انسانی وسائل کو فروغ کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے لوک سبھا میں بھارتیہ جنتا پارتی کے گنیش سنگھ کے ایک سوال کے جوا ب میں یہ اطلاع دی۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے ریزرویشن کے معاملہ میں پوری یونیورسٹی کو ایک یونٹ ماننے کے لہ آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں خصوصی اجازت عرضی دائر کی تھی، جو خارج ہوگئی ہے ۔
انہوں نے بتایا ک حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف جائزہ عرضی دائر کرے گی اور اگر وہ بھی خارج ہوگئی تو اس کے پاس آرڈی ننس کا متبادل کھلا ہے ۔ انہوں نے ایس پی کے دھرمیندر یادو کے سوال کا جواب دیتے ہوئے یقین دلایا کہ یونیورسٹیوں کو ایک یونٹ مان کر ہی 200نکاتی روسٹر نظام سے ہی بھرتیاں ہوں گی۔ جب تک جائزہ عرضی پر کوئی فیصلہ نہیں آجاتا تب تک 13نکاتی روسٹر نظام سے بھرتیاں نہیں ہوں گی۔مسٹر جاوڈیکر نے کہا کہ حکومت دیگر پسماندہ طبقات (او بی سی) ، درج فہرست ذات (ایس سی) اور درج فہرست قبا ئل (ایس ٹی) کو تعلیمی اداروں میں تقرریوں میں ریزرویشن دینے اور پرانے روسٹر نظام سے ہی بھرتیاں کرنے کے حق میں ہے ۔خیال رہے کہ کچھ اپوزیشن جماعتوں نے اعلی تعلیمی اداروں میں تقرریوں میں ریزرویشن سے متعلق 13نکاتی روسٹر کے بجائے 200نکاتی روسٹر کو واپس لینے کے لئے آرڈی ننس یا بل لانے کی مانگ کی ہے ۔ ان کی دلیل ہے کہ روسٹر نظام سے ایس سی، ایس ٹی اور او بی سی کا ریزرویشن متاثر ہوگا۔

Ads