Jadid Khabar

رابر ٹ واڈرا کے ساتھیوں کے ٹھکانوں پر ای ڈی کا چھاپہ

Thumb

نئی دہلی،8دسمبر(ایجنسی)ای ڈی نے جمعہ کو کہا کہ اس نے کانگریس صدر راہل گاندھی کے بہنوئی رابرٹ واڈرا کی کمپنیوں سے منسلک کچھ لوگوں کے احاطے پر چھاپے مارے ہیں۔دفاعی معاہدے میں بعض افراد نے مبینہ طور پر رشوت کے سلسلے میں ان پر حملہ کیا تھا۔ سرکاری ذرائع نے دفاعی سودے کے بارے میں معلومات دینے سے انکار کر دیا۔ذرائع نے کہا کہ چھاپے قومی دارالحکومت علاقہ اور بنگلور میں تین جگہوں پر مارے گئے۔ای ڈی ذرائع کے مطابق ا سکائی لائٹ ہاسپٹلٹی کے سکھدیو وہار واقع دفتر میں چھاپے پہلے 11 بجے مارے گئے۔ واڈرا کے وکیل سمن جیوتی کھیتان نے ان چھاپوںکو تبدیلی کی سیاست اور بدقسمتی بتایا۔کھیتان نے کہا ’’پانچ برسوں سے موجودہ حکومت نے میرے موکل واڈرا کو ڈرانے، ان کی شبیہ کو نقصان پہنچانے کی ہر ممکن کوشش کی ہے۔ حکومت نے بدنیتی اور ان کی شبیہ کو خراب کرنے  اور ان کے اہل خانہ کونشانہ بنانے کے لئے ای ڈی ، سی بی آئی اور محکمہ انکم ٹیکس سمیت سبھی ایجنسیوں کا استعمال کیا گیا ہے۔انہوں نے کہاکہ اسی ارادے سے جے پور اور دہلی کے ای ڈی حکام نے سکھدیو وہار، نئی دہلی کے دفاتر پر چھاپہ مارا اور اس کے ساتھ ہی نوئیڈا واقع ان کے ساتھی کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا۔ انہوں نے کہا، "چھاپے مکمل طور پر غیر قانونی طریقے سے صبح سے ہی مارے جارہے ہیں اور کسی ملازم کواس احاطے میں جانے کی اجازت نہیں ہے۔کھیتان نے کہاکہ اس سے بھی زیادہ حیرت انگیزبات یہ ہے کہ حکومت یا ای ڈی بار بار اصرار کرنے کے بعد بھی دفتر کھولنے کے لئے ملازمین کا انتظار نہیں کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ حکام نے غیر قانونی طور پر دروازوں اور تالوں کو توڑ دیا اور دفتر میں داخل ہوگئے۔ اس نے دفتر میں تمام کیبن کے تالوں کو بھی توڑ دیا۔ ایڈی کے افسران دفتر کے اندر ہیں اور وہ نہ ہی وکیل کو اندر جانے دے رہے ہیں اور نہ ہی کسی دوسرے نمائندے کو جانے دے رہے ہیں۔کھیتان نے کہاکہ یہ جانتے ہوئے کہ واڈرا نے کئی برسوں سے تمام ایجنسیوں کے سمن کے جواب دیئے ہیں اور تمام دستاویزات فراہم کرائے ہیں، ایجنسی نے چھاپے مارے۔ انہوں نے کہاکہ میرے موکل کے خلاف یہ سب بغیر کسی جرم کے درج کئے یا ایف آئی آر درج کئے ہی کیا گیا۔کھیتان نے کہا یہ راجستھان اور تلنگانہ میں ہوئے انتخابات کے دوران لوگوں کی توجہ اہم مسئلہ سے ہٹانے کے لئے کی گئی کوشش ہے۔

Ads