Jadid Khabar

کسان احتجاج :200سے زیادہ افراد پر معاملہ درج

Thumb

پھگواڑا،6دسمبر(یواین آئی)شوگرملوں پر بقایا رقم کی ادائیگی اور گنے کی قیمت بڑھانے کی مانگوں کے سلسلے میں گنا کسانوں کے 33گھنٹے کے دھرنے کے سلسلے میں پولیس نے آج نو کسانوں سمیت 200نامعلوم افراد پر معاملہ درج کیا ہے ۔اس احتجاجی مظاہرے کی وجہ سے نیشنل ہائی وے نمبر ایک پر بے حدٹریفک جام تھا اور پنجاب حکومت نے کل شام اعلان کیا کہ کسانوں کو فی کونٹل 25روپے براہ راست ادائیگی کی جائے گی،باقی 285روپے فی کونٹل کی ادائیگی شوگر ملیں کریں گی۔اس کے بعد کسان دھرنے سے اٹھ گئے ۔پھگواڑا پولیس نے آج تعزیرات ہند کی دفعہ 188،283،109،120بی اور قومی شاہراہ ایکٹ 1956 کی دفعہ کے تحت دو سو سے زیادہ لوگوں کے خلاف معاملہ درج کیا ہے ۔پولیس کی طرف سے مظاہرے کی جو ویڈیوگرافی کرائی گئی تھی اس سے نو کی شناخت ہوگئی ہے ۔جن میں منجیت سنگھ رائے ،ستنام سنگھ ساہنی،کرپال سنگھ مسپور،گرجیت سنگھ ڈلا،سکھپال سنگھ دفر،سنتوکھ سنگھ سندھو،بلجندر سنگھ راجو،سرجیت سنگھ اور بلدیو سنگھ شامل ہیں۔کپورتھلا ایس ایس پی ستندر سنگھ نے آج اس کی تصدیق کی ہے ۔دھرنے کی وجہ سے پھگواڑا اور جالندھر کے درمیان ٹریفک جام رہا تھا۔لدھیانہ اور جالندھر کے درمیان ٹریفک کو جوڑنے والی سڑکوں سے ٹریفک کودوسری سمت موڑاگیا تھا۔اس سے مسافروں کو کافی پریشانی ہوئی۔ہندوستان-پاکستان ‘سدائے سرحد’بسیں کرتارپور-کپورتھلا -نکودر-پھلور راستے سے چلائی گئیں۔کپورتھلا ڈپٹی کمشنر محمد طیب اور ایس ایس پی ستندر سنگھ منگل سے پھگواڑا میں مقیم تھے اور انہوں نے کسانوں کے ساتھ کئی میٹنگ کیں۔

Ads