Jadid Khabar

میزورم اسمبلی انتخابات: الیکشن کمیشن کی خصوصی ٹیم ریاست کی این جی او اور کوآرڈنیشن کمیٹیوں سے ملاقات کرے گی

Thumb

ایزول/ نئی دہلی ،09 نومبر (یو این آئی) میزورم کے چیف الیکٹورل آفیسر ایس بی ششانک کو ہٹانے کے مطالبے سے پیدا ہونے والے بحران کو حل کرنے کے لئے ریاست کے دارالحکومت میں الیکشن کمیشن کے ڈپٹی کمشنر سدیپ جین کی صدارت میں اعلی سطح کے وفد پر لوگوں کی نظریں لگی ہوئی ہیں۔میزورم اسمبلی انتخابات کے انچارج مسٹر سدیپ جین جمعہ کو ایزول جائیں گے اور اس دوران ریاست کی غیر سرکاری تنظیموں (این جی او) کوآرڈنیشن کمیٹیوں ، سول سوسائٹی اور طلبہ تنظیموں کے ایک گروپ کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے کا امکان ہے ۔میزو این جی او کوڑدنیشن کمیٹی کا مطالبہ ہے کہ مسٹر ششانک کو ہٹایا جائے اور انہیں ریاست سے باہر کا راستہ دکھایا جائے ۔ وزیر اعلی لال تھنھولا اور ریاست کی بی جے پی یونٹ نے بھی انہیں ہٹانے کے مطالبے کی حمایت کی ہے ۔مسٹر ششانک بدھ کو الیکشن کمیشن کے اعلی حکام کے ساتھ ملاقات کے لئے ایزول سے نئی دہلی کے لئے روانہ ہوئے ہیں۔ میزو شہریوں نے منگل اور بدھ کو ریاستی چیف الیکٹورل افسر کے خلاف مظاہرہ کیا اور ان کے دفتر کا گھیراؤ کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر ششانک کو انتخابی عمل سے متعلق کام کرنے کی اجازت نہیں ہے ۔دو نومبر کو چیف الیکٹورل افسر کی شکایت کے بعد میزو انتظامی سروس افسر اور اس وقت کے چیف سکریٹری (داخلہ) لالونماویا چونگو کو ٹرانسفر کر دیا گیا ہے ۔ جس کے بعد مسٹر ششانک نے کہا کہ انہوں نے صرف قوانین پر عمل کیا ہے کیونکہ سینئر افسران ریاست کے انتخابی عمل میں مداخلت کر رہے تھے ۔میزورم کے رہنما اور سماجی کارکن چاہتے ہیں کہ میزورم میں دیگر میزو باشندوں کی طرح نامزد 'برو' کمیونٹی کو پولنگ مراکز میں ہی ووٹ دینا چاھیے ۔ واضح رہے کہ جوائنٹ کمیٹی مسٹر ششانک پر برو یا رینگس کمیونٹی کی در پردہ حمایت کرنے کا الزام لگا رہی ہے ۔'برو' پناہ گزینوں کی سب سے بڑی تنظیم نے گزشتہ ماہ چیف الیکشن کمشنر اوپي راوت سے تریپورہ کے ریلیف کیمپوں میں پولنگ مراکز قائم کرنے کی اپیل کی تھی تا کہ وہ لوگ 28 نومبر کو ہونے والے میزورم اسمبلی انتخابات میں ووٹ دے سکے ۔

Ads