Jadid Khabar

آگرہ میں 15 افراد کی موت، تاج محل کے دو ستون بھی گرے

Thumb

آگرہ،12اپریل(ایجنسی) بدھ کی شام سے آندھی اور بارش کی وجہ سے آگرہ کی نظام زندگی درہم برہم ہوگیا ہے۔ اتنا ہی نہیں اس کا قہر تاج محل پر ب ھی دیکھا گیا۔ جانکاری کے مطابق تاج محل کے دروازے کے 2 گلدستہ پلر گر گئے ہیں۔ بھیم نگری کا منچ بھی گر گیاہے۔ شاہ گنج میں مسجد کا مینار بھی گر گیا ہے۔ وہیں آندھی طوفان اور ژالہ باری سے علاقے میں 15 لوگوں کی موت بھی ہوگئی ہے، جبکہ 24 سے زیادہ افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ آندھی اور طوفان نے پورے شہر میں تباہی مچا دی ہے۔ دراصل سخت آندھی طوفان میں تقریباً 35 ملی میٹر بارش ہوئی اور 40 منٹ تک ا ولے گرتے رہے۔ سخت طوفان سے شہر سے لیکر 6 دیہاتوںتک لاکھوں درخت، بل بورڈز، ٹین شوڈ اور کھمبے اکھڑ گئے۔ کئی جگہوں پر گھر اور دیواریں بھی گر گئیں۔آگرہ میں آٹھ، متھرا میں چاراور فیروز آباد میں کئی لوگوں کی موت ہوگئی۔ وہیںتاج محل کے دو دروازوں کے مینارگرنے کے ساتھ ساتھ اہم یادگار کوبھی نقصان پہنچا ہے۔ طوفان میں دو درجن سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ بونڈر میںکروڑوں روپے کے نقصان کی جانکاری ہے۔وہیں بہت سے علاقے پانی میں ڈوب گئے۔80 فیصد گیہوں کی کھیتی بھی تباہ و برباد ہوگئی ہے۔

 

Ads